نظر بد کی علامت

نظر بد کی علامت
نظر بد کی علامت


یوزرنیم یا ای میل ایڈریس


پاسورڈ

مجھے لاگ ان رکھیں

نظر بد کی علامت

مفتی صاحب میرا سوال یہ ہے کے نظر لگنے کی علامات کیا ہیں ؟  اور اگر نظر لگ جاۓ تو اسکا حل کیا ہے اسلامی رو سے ؟  اور نظر سے بچاو کیسے کیا جاسکتا ہے مہربانی جلد رہنمائ فرمائیں ۔

الجواب حامداومصلیاً:

دوسرا علاج یہ کہ دعائیں یا آیاتِ قرآنیہ پڑھ کر اس پر دم کیا جائے ایک دعا یہ ہے کہ:

«بِسْمِ اللَّهِ أَرْقِيكَ مِنْ كُلِّ شَيْءٍ يُؤْذِيكَ، وَمِنْ شَرِّ كُلِّ نَفْسٍ أَوْ عَيْنِ حَاسِدٍ اللَّهُ يَشْفِيكَ بِسْمِ اللَّهِ أَرْقِيكَ»

اور سب سے بہتر علاج یہ ہے کہ معوذتین(سورت الناس اور سورت الفلق)پڑھ کر نظر لگنے والے پر دم کیا جائے ان شاء اللہ ایسا کرنے سے نظر کا اثرزائل ہو جائے گا، اسی طرح اگر دیکھنے والا کسی اچھی چیز کو دیکھ کر ماشاء اللہ کہے تو ایسا کرنے سے نظر کا اثر نہیں ہوگا ۔

=============
صحيح مسلم – (4 / 1719)
عن بن عباس عن النبي صلى الله عليه وسلم قال * العين حق ولو كان شيء سابق القدر سبقته العين وإذا استغسلتم فاغسلوا
=============
مرقاة المفاتيح شرح مشكاة المصابيح – (7 / 2870)
كَانُوا يَرَوْنَ أَنْ يُؤْمَرَ الْعَائِنُ فَيَغْسِلُ أَطْرَافَهُ وَمَا تَحْتَ الْإِزَارِ، فَتُصَبُّ غُسَالَتُهُ عَلَى الْمَعْيُونِ يَسْتَشْفُونَ بِذَلِكَ، فَأَمَرَهُمُ النَّبِيُّ – صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ – أَنْ لَا يَمْتَنِعُوا عَنِ الِاغْتِسَالِ إِذَا أُرِيدَ مِنْهُمْ ذَلِكَ
=============
صحيح مسلم – (4 / 1725)
عن أنس قال * رخص رسول الله صلى الله عليه وسلم في الرقية من العين والحمة والنملة
=============
مرقاة المفاتيح شرح مشكاة المصابيح – (7 / 2868)
(مِنَ الْعَيْنِ) : أَيْ مِنْ أَجْلِ إِصَابَةِ عَيْنِ الْجِنِّ أَوِ الْإِنْسِ، وَالْمُرَادُ بِالرُّقْيَةِ هُنَا مَا يُقْرَأُ مِنَ الدُّعَاءِ وَآيَاتِ الْقُرْآنِ لِطَلَبِ الشِّفَاءِ مِنْهَا: مَا وَرَدَ مِنْ حَدِيثِ مُسْلِمٍ وَالتِّرْمِذِيِّ وَالنَّسَائِيِّ وَابْنِ مَاجَهْ عَنْ أَبِي سَعِيدٍ مَرْفُوعًا ” «بِسْمِ اللَّهِ أَرْقِيكَ مِنْ كُلِّ شَيْءٍ يُؤْذِيكَ، وَمِنْ شَرِّ كُلِّ نَفْسٍ أَوْ عَيْنِ حَاسِدٍ اللَّهُ يَشْفِيكَ بِسْمِ اللَّهِ أَرْقِيكَ» ”
=============
سنن الترمذي – (4 / 395)
عن أبي سعيد قال : كان رسول الله صلى الله عليه و سلم يتعوذ من الجان وعين الإنسان حتى نزلت المعوذتان فلما نزلتا أخذ بهما وترك ما سواهما
=============
والله تعالي اعلم بالصواب
محمدعاصم عصمہ اللہ تعالی

Welcome, Login to your account.

Recover your password.

A password will be e-mailed to you.

Baaghi TV – باغی ٹی وی | خبریں، تازہ خبریں، بریکنگ نیوز | News, latest news, breaking news

نظر بد کیاہے اور یہ انسان کے جسم پر کیسے اثر انداز ہوتی ہے ؟
کہتے ہیں بری نظر انسان کو قبر اور اونٹ کو ہانڈی تک لے جاتی ہے بری نظر پہاڑ کو کھا جاتی ہے اور نظر بد انسان کو ہلاک کر دیتی ہے مگر بہت سے لوگ اس بات پر یقین نہیں رکھتے ان کا کہنا ہے کہ یہ سب توہم پرستی اور من گھڑت باتیں ہیں جن کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں مشہور امریکی رائٹر رابرٹ فلگھم اپنی کتاب آئی ریلی نِیڈ ٹو نو آئی لرن ان کنڈر گارٹن میں لکھتے ہیں کہ افریکہ کے سولومون آئی لینڈ پر رہنے والے قبائل جب کسی درخت کی لکڑی کو استعمال کرنے کا ارادہ کرتے ہیں تو وہ ہرے بھرے درخت کو نہیں کاٹتے سولومون قبائل کے لوگ اکٹھے ہوکر اُس درخت کو گھیر لیتے ہیں اور اُسے بد دعائیں دینا شروع کر دیتے ہیں اور پھر کچھ ہی دنوں میں وہ۔درخت سوکھ جاتا ہے تب وہ اُسے کاٹ کر اُس کی لکڑی استعمال کر لیتے ہیں کیا نظر بد انسان کے جسم پر اثر انداز ہوتی ہے ؟ سائنس بھی اس بات کو نہیں مانتی کیوں کہ سائنس ہر اُس چیز سے انکار کر دیتی ہے جسے وہ لیبارٹری میں ٹیسٹ نہیں کر سکتےمگر میٹ فزکس کو پڑھنے والے اس بات کو جانتے ہیں کہ نظر بد کے انسانی جسم پر اثرات پیدا ہوتے ہیں اور وہ نظر نہ آنے والی لہروں کی صورت میں جسم کو نقصان پہنچاتی ہے

نظر بد کی علامت

ٹائیفائیڈ بخار کی علامات اور اقدامات

سیزنل افیکٹیو ڈس آرڈر (SAD) کی علامات علاج اور احتیاطی تدابیر

یہ پینڈورا باکس ہے کیا? حقیقت یا افسانہ?

پچھلی خبر

میرے پاس جادو کی چھڑی نہیں کہ سب ایک دم ٹھیک ہو جائے، مصباح الحق

اگلی خبر

مریم نواز نے خاموشی توڑ دی، لندن اڑان بھرنے کی تیاریاں شروع

فیٹی لیور ایک اور موذی مرض کی وجہ بن سکتا ہے،تحقیق

بہترین اوقات جن میں پانی پینا انتہائی مفید ثابت ہوتا ہے

فاسٹ فوڈ کے فوائد

حکومت غیر متعدی بیماریوں سے بچاؤ کے لیے بھی این سی او سی کی طرز کے اقدامات اٹھائے…

کشمیر

اقوام متحدہ کشمیریوں کے ساتھ حق خود ارادیت کا وعدہ پورا کرے، وزیراعظم

قابض بھارتی فوج نے مزید 3 کشمیریوں کو شہید کردیا

مقبوضہ کشمیر:مندر میں بھگدڑ سے 12 ہندو یاتری ہلاک 20 زخمی

پاکستان کشمیری طلبا کو تعلیم کے نام پر عسکریت پسند بنانے لگا،مودی سرکار کا ایک اور الزام

شوبز

کمال آر خان نے سلمان خان کو بڑا بھائی کہہ کر جھگڑا ختم کر دیا

عامر خان سے خفیہ شادی کی افواہوں پر پریتی زنٹا کا ردعمل

عدالت کا غیرملکی ماڈل ٹریزا کا پاسپورٹ سمیت دیگر سامان واپس کرنے کا حکم

شوبز انڈسٹری کے سینئر اداکار رشید نازکی وفات،وزیراعلیٰ کا اظہار افسوس

سائنس و ٹیکنالوجی

ابو ظبی: شہریوں کے لیے بغیر ڈرائیور ٹیکسی سروس کا آغاز

جیک ڈورسے کا عہدہ چھوڑنے کا اعلان،ٹوئٹر کا نیا سی ای او کون ہوگا؟

متحدہ عرب امارات کا بارش کے لیے ڈرونز کا استعمال


فری لانسنگ کیا ہے؟ تحریر:اقصٰی یونس

چین دنیا کی سب سے بڑی ونڈ ٹربائن کے پروٹوٹائپ کی آزمائشیں اگلے سال شروع کر دے…

نظر بد کی علامت

باغی ٹی وی کرپشن، بددیانتی، جرائم، ظلم و زیادتی اورملک دشمن عناصر کے خلاف ایک مضبوط قوم کی آواز ہے جس کا منشور ملکی مفاد کی بالا دستی اور نظریاتی دفاع ہے۔

باغی ٹی وی پر شائع ہونے والی تمام خبریں ذرائع سے مصدقہ اور حقائق پر مبنی ہیں۔ کسی بھی خبر کی تردید و توثیق ادارے کی طرف سے بروقت ویب سائٹ پر شائع کر دی جاتی ہے۔ باغی ٹی وی حق اور انصاف کے بول کے ساتھ درستگی اور اصلاح کے صحافتی اصول و ضوابط پر کاربند ایک ادارہ ہے۔
Visit our privacy policy here

Welcome, Login to your account.

Recover your password.

A password will be e-mailed to you.

متفرقات
>>

دعاء و استغفار

سوال نمبر: 164300

جواب نمبر: 16430001-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

بسم الله الرحمن الرحيم

نظر بد کی علامت


Fatwa : 1227-974/SN=1/1440

(۱) آیات کریمہ، ادعیہ ماثورہ یا کسی اور مباح دعاء سے روحانی علاج کرنا کرانا شرعاً جائز ہے، بس شرط یہ ہے کہ اسے موٴثر بالذات نہ سمجھا جائے؛ بلکہ اسے بھی دیگر مادی علاج کی طرح علاج تصور کرے۔ عن عوف بن مالک الأشجعي قال: کنا نرقی فی الجاہلیة ، فقلنا یارسول اللہ! کیف تری في ذلک؟ فقال: اعرضوا علي رقاکم ، لابأس بالرقی مالم یکن فیہ شرک (مسلم،رق: ۲۲۰۰، باب لابأس بالرقی مالم یکن فیہ شرک) وفی رد المختار : ولا بأس بالمعاذات إذا کتب فیہا القرآن أو أسماء اللہ تعالی (رد المحتار: ۹/۵۲۳، ط: زکریا)۔

(۲) نظر بد کا اثر مختلف تکالیف کی شکل میں ظاہر ہوتا ہے، اس کی کسی خاص علامت کا ذکر نہیں ملتا، عاملوں کو اس میں مہارت ہوتی ہے، اگر کوئی واقعہ پیش آئے تو کسی دین دار اچھے عامل کو دکھا دینا چاہئے۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،دارالعلوم دیوبند

اکثر لوگ نظر بد سے بچنے کے لیے کالے رنگ کے دھاگے پر سورہ یسین وغیرہ کا دم کرکے کلائی پر باندھ دیتے ہیں۔ کیا ایسا کرنا صحیح ہے؟

حافظہ کی تیزی اور ذہنی انتشار کو دور کرنے کے لیے اور گھبراہٹ کو رفع کرنے کے لیے کوئی بہترین وظیفہ عنایت فرمائیں۔ آپ کی دعاؤں کا طالب۔

میں سعودی عربیہ میں پچھلے ایک سال سے کام کررہا ہوں۔ میں انڈیا میں ایک بہت بڑے گناہ میں ملوث تھا جس کی وجہ سے میری صحت خراب ہوئی۔ میں بار بار توبہ کرتا رہا اور بار بار گناہ کرتا رہا۔ میں یہاں آیا تو کچھ دن وہ عادت ختم ہوگئی اور اب پھر شروع ہوگئی۔ مہربانی کرکے مجھے موت کے منھ سے بچا لیجئے۔ میں اپنی زندگی سے تنگ آگیا ہوں۔ میری شادی نہیں ہوئی ہے۔ اور حالت ایسی نہیں ہے کہ میری شاد ی جلد ہوجائے۔ اور میری فیملی میں بھی بہت پریشانی ہے جس کی وجہ سے میں یہاں سے جا بھی نہیں سکتا ہوں۔ میرے اوپر قرض بھی بہت ہے۔ برائے کرم مفتی صاحب میرے لیے علیحدہ دعا کردیجئے میں بہت ہی زیادہ پریشان ہوں۔اللہ تعالی میرے مال میں برکت دے کر میرے قرض کو ادا فرمادے۔ اور میری ساری بری عادت ختم ہوجائے۔ اور میں ایک خوشحال زندگی جینے لگوں۔ میرے لیے خصوصی دعا کردیجیے۔

قدیم روایات سے پتہ چلتا ہے کہ ہزاروں سالوں سے انسانی آنکھ کو جسم کا سب سے طاقتور اور اثرانداز ہونے والا جزو مانا جاتا رہاہے۔ دینا کے ہر معاشرہ میں ہمیں آنکھوں پر لکھی گئی شاعری کا ایک نہ ختم ہونے والا سلسلہ ملتا ہے۔ کہیں آنکھوں کی خوبصورتی کا ذکر ہے تو کہیں کسی کی مست اور قاتل نگاہوں کے فسانے درج ملتے ہیں۔ اسی طرح جب ہم فن مصوری اور تصاویر کو لیتے ہیں تو یہاں بھی انسانی آنکھ مرکزی مقام رکھتی ہے۔ موجودہ ترقی یافتہ دور میں ایسےحفاظتی نظام بنائے گئے ہیں جن کا انحصار انسانی آنکھ پر ہے۔

اسی طرح تقریبا دنیا کے ہر مذہب میں انسانی آنکھ کے دوسرے افراد پر پڑنے والے اثرات کا ذکر ملتا ہے۔ دنیا میں جس آنکھ کو سب سے زیادہ شہرت ملی اس کا تعلق مصر سے ہے اور اس آنکھ کو دنیا بھر میں ‘ آئی آف ھورس ‘ کے نام سے جانا جاتا ہے۔ مصری روایات کی مطابق ھورس کی آنکھ انسانی قوت اور ترقی کی علامت ہے اور انسان کے علاوہ دنیا میں کوئی اور ایسی مخلوق نہیں جس کی آنکھ میں یہ اثر ہو۔ یہودیت سےعیسائیت اور اسلام تک اور پھر ہندو مذہب سے افریقی قبائل تک، قدیم تہذیبوں سے جدید دنیا تک ہمیں ہر جگہ انسانی آنکھ کے اثرات کی ان گنت داستانیں ملتی ہیں۔ انسانی آنکھ طاقتور ترین قوت کا مرکز ہے۔ قوت دو طرح سے استعمال کی جا سکتی ہے۔ تعمیری اور تخریبی دونوں کاموں میں قوت کو استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کی سب سے واضح مثال ایٹم ہے جس سےہم بجلی پیدا کر کے اندھیروں میں روشنی بکھیر سکتے ہیں اور دوسری طرف اسی ایٹم سے بم بنا کر نسل انسانی کو مٹا سکتے ہیں۔

انسانی تاریخ میں ایسے ہزاروں واقعات ملتے ہیں جن میں انسان آنکھ کی تخریبی یا منفی اثرات کا ذکر ملتا ہے۔ یہ واقعات کچھ داستانوں اور کچھ حقائق پر مبنی ہیں۔ انسانی آنکھ سے خارج ہونے والی منفی قوت یا منفی شعاعوں میں یہ اثر ہے کہ وہ کسی کی زندگی میں بہت مشکلات لانے کا سبب بنتی ہیں۔ انسانی آنکھ سے جب منفی قوت خارج ہوتی ہے تو اسے عام اصطلاح میں ‘ نظر بد ‘ کہا جاتا ہے۔ نظر بد کی وجہ سے کوئی بھی انسان بیمار پڑ سکتا ہے اور ایک خوش قمست ترین انسان دنیا کے بدقسمت انسانوں میں شامل ہو جاتا ہے۔

نظر بد کی عمومی وجہ حسد ہوتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ عربی زبان میں نظر بد کو عین الحسود بھی کہا جاتا ہے۔ حسد ایک ایسی منفی قوت ہے کہ جو دوسرے کی زندگی تک کو خطرے میں ڈال سکتی ہے۔ نظر بد ایسی منفی شعاعیں خارج کرتی ہے جس سے متاثر ہونے والے انسان کے ارد گرد ہر وقت ایک منفی قوت کا دائرہ بن جاتا ہے۔ نظر بد لگانے والا دوسروں کے متعلق بری سوچ رکھتا ہے۔ ایسے شخص کی آنکھ دوسرے کو روحانی اور جسمانی نقصان پہچانے کا باعث بنتی ہے۔ نظر بد کی وجہ سے ایک خوش حال اور کامیاب انسان کی زندگی بدقسمتی، صحت کے مسائل اور شدید بیماری کا شکار ہو جاتی ہے۔ کامیابی سے چلتا کاروبار یک دم خسارہ میں چلا جاتا ہے اور آخر اسے بند کرنے کی نوبت آ جاتی ہے۔ ایک امیر آدمی مختصر عرصہ میں غربت کی زندگی گذارنے پر مجبور ہو جاتا ہے۔ لاتعداد ایسے افراد بھی ہیں کہ لاکھ کوشش کے باوجود وہ اولاد کی نعمت سے محروم رہتے ہیں جبکہ طبی طور پر وہ اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں۔ اولاد سے محرومی کی ایک بڑی وجہ ایسے جوڑے کا نظر بد کا شکار ہونا بھی ہے۔ اسی طرح وہ افراد جن کی مناسب عمر میں شادی نہیں ہوپاتی اور رشتوں کے انتظار میں عمر گذرتی جاتی ہے اس کی ایک اہم وجہ اس لڑکی یا لڑکے پر نظر بد کا اثر بھی ہوتا ہے۔

اسلامی میں قرآن کریم کے بعد سب سے اہم کتاب صحیح بخاری میں ہمیں نظر بد سے متعلق بہت ساری احادیث ملتی ہیں ہم یہاں اختصار سے کام لیتے ہوئے چند احادیث آپ کی خدمت میں پیش کر رہے ہیں۔ صحیح بخاری کی جلد 7 میں ام المومنین بی بی عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نظر بد کے اثرات کے خاتمہ کے لیے بنی کریم صل اللہ علیہ وآلہ وسلم نے معوذتین پڑھنے کی ہدایت کی۔ اسی طرح صحیح بخاری میں ہمیں ام المومینن بی بی ام سلمی رضی اللہ عنہا سے بھی روایت ملتی ہے کہ ایک لڑکی کے چہرے پر کالے نشان تھے جب بنی کریم صل اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اسے دیکھا تو ارشاد فرمایا کہ یہ نظر بد کا شکار ہے اس پر دم کروا دو تاکہ اس سے نظر بد کے اثرات ختم ہو جائیں۔ حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے صحیح بخاری میں روایت ہے کہ نظر بد حقیقت ہے۔

نظر بد کی علامت

حافظ ابن کثیر سورہ یوسف کی آیات 67-68 کی تفسیر میں لکھتے ہیں کہ حضرت یعقوب علیہ السلام نے اپنے بیٹوں کو کہا تھا کے شہر میں اس کے مختلف دروازوں سے داخل ہونا۔ ابن کثیر نے مختلف صحابہ کرام(رض) سے روایت کی ہے کہ حضرت یعقوب نے ایسا اس لیے کیا کہ ان کو خدشہ تھا کہ ان کے بیٹوں کو نظر بد نہ لگے۔ ابن کثیر اپنی کتاب تفسیر ابن کثیر کی جلد 6 میں لکھتے ہیں کہ سورہ القمر کی آیت 51 نظر بد سے متعلق ہے۔

نظر بد کا شکار انسان منفی شعاعوں کو اپنی طرف کھینچتا ہے۔ اس کی زندگی میں تاریکی کا دور شروع ہو جاتا ہے۔ اس کا آغاز چھوٹے چھوٹے مسائل سے ہوتا ہے جن میں چابیوں، پرس، سردرد نظام ہاضمہ کی خرابی، اہم کاغذات کا گم ہو جانا سے ہوتا ہے اور پھر اس میں سختی پیدا ہو جاتی ہے زندگی میں ہر کام میں رکاوٹ کا سامنا ہوتا ہے جس سے انسان خود کو بدقسمت انسان سمجھنا شروع کر دیتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ شدید بیماری میں مبتلا ہونا، ملازمت کا ختم ہونا، کاروبار کا بند ہونا اور حادثات نظر بد کی شدت کی علامات ہیں۔

ہر مذہب اور معاشرہ میں نظر بد سے بچاؤ کے لیے بہت سارے اعمال اور دعائیں بیان کی گئی ہیں۔ اسلام میں بہت ساری احادیث جن میں نظر بد کے اثرات سے خاتمہ کے لیے مختلف دعاؤں کا ذکر کیا گیا ہے۔ ہم اپنے قارئین کے لیے چند احادیث پیش کر رہے ہیں۔

۱

معوذتین کا پڑھنا

قل اعوذب الناس اور قل اعوذ برب الناس 11 مرتبہ پڑھ کر مریض پر دم کرنا۔

۲

ابن عساکر بیان کرتے ہیں کہ نبی کریم صل اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا کہ یہ دعا پڑھ کر خود کو، اپنی اولاد کو اور بیویوں کو اس کی پناہ میں دو اور اس جیسی کوئی اور پناہ کی دعا نہیں

لفظ عاف کے الحسن والحسینؑ درج ہے ، یہاں مریض کا نام لیں جو نظر بد کا شکار ہے اور پھر اس پر دم کر دیں۔

۳
یہ دعا صحیح بخاری کی جلد 4 میں درج ہے کہ نظر بد سے تحفظ عطا کرتی ہے

اعوذ بکلمات اللہ التامة من کل شیطان و ھامة و من کل عین لامة

اسی طرح علمائے روحانیت نے بھی نظر بد سے بچاؤ کے بہت تیز اثر اور بہترین اعمال پیش کیے ہیں۔ ہم آج ایک بہت ہی نایاب طلسم اور انگشتری پیش کر رہے ہیں۔ اس طلسم اور انگشتری سے بہتر شاید ہی کوئی اور روحانی عمل ہو جو نظر بد کو دور کرنے میں اتنا کامیاب اور پراثر ہو۔ یہ طلسم اور انگشتری نظر بد کے تمام اثرات کو مکمل طور پر ختم کر دیتی ہے۔ ان کو پاس رکھنے سے انسان مستقل طور پر نظر بد سے محفوظ ہو جاتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ اس طلسم اور انگشتری کی بدولت انسان خود کو اپنے مقاصد اور خوابوں کی تکمیل پاتے دیکھتا ہے۔ انسان کی زندگی سے ہر طرح کی منفی اثرات کا خاتمہ ہو جاتا ہے اور پھر اس انسان اور کامیابی کے درمیان کوئی رکاوٹ حائل نہیں ہوتی۔ یہ طلسم اور انگشتری نظر بد کی وجہ سے پیدا ہونے والی تمام بندشوں کو توڑ دیتی ہے۔ یہ طلسم اور انگشتری انسان کو اپنے حصار میں لے لیتی ہے جس سے کوئی بھی آپ کو نظر بد نہیں لگا سکتا اور آپ اپنی زندگی میں کامیابی اور مقاصد کی تکمیل کر پاتے ہیں۔

 

یہ طلسم یا انگشتری آپ شرف قمر کے دوران چاندی پر کندہ کرکے تیار کر سکتے ہیں بخورات قمر اور دیگر لوازمات عملیات کا خیال رکھتے ہوئے۔

دولت کے حصول کا جفری عمل – شرف زہرہ 2018۔

شرف شمس 2018 – عمل مہر سلیمانی – ایک مجرب ترین عمل و لوح ۔

علمائے علم الاوفاق نے جہاں مشکل ترین قواعد کا ذکر کیا ہے وہیں کچھ ایسے سادہ طریق بھی ہیں جو کسی بھی طرح اپنے اثرات کے اعتبار سے کم نہیں ۔ اس مرتبہ ایک ایسے نقش قرآنی کا طریقہ پیش کیا جا رہا ہے جو کئی مرتبہ ہماری میزان کی کسوٹی پر پورا اترا ہے ۔ ہمہ قسم کے مسائل میں اس نقش معظم کو استعمال کیا جا سکتا ہے ۔ [مزید جانئے۔۔۔]

Your email address will not be published.

Comment

Name *

Email *

Website

Save my name, email, and website in this browser for the next time I comment.

جلدنمبر18.جولائی2021.شمارہ نمبر10


اسمِ گرامی:۔


ایمیل ایڈریس:۔

Sorry. No data so far.

ٹھائیس سال قبل شائع ہونے والا علم جفر کا قاعدہ اسغن جسے اظہر عنایت شاہ صاحب نے اپنی دانست سے اور آسان بنا دیا ہے ۔ [مزید جانئے۔۔۔]

رات کو روحانیت کی طرف سے اشارہ ملا  کہ۔۔۔۔۔۔ [مزید جانئے۔۔۔]

طلسم جلجلوتیہ الکبریٰ ۔ اسم اھوج کے خواص ۔ [مزید جانئے۔۔۔]

یہ عمل عجیب ترین ہے ۔ دوران عمل وہ حیرت انگیز مناظر دیکھنے کو ملتے ہیں جن سے نظر ہٹانے کو دل نہیں چاہتا۔ [مزید جانئے۔۔۔]

نظر بد کی علامت

طلسم اسمائے جلجلوتیہ الکبریٰ کے خواص و اثرات ، وفق المسبع و وفق المثمن، عمل برائے حصار طلسم اسمائے [مزید جانئے۔۔۔]

طلسم جلجلوتیہ الکبریٰ ۔ اسم اھوج کے خواص ۔ [مزید جانئے۔۔۔]

[email protected] – 2018 | Roohanialoom.com تمام معنوی و مادی حقوق ، روحانی علوم ڈاٹ کام کے لئے محفوظ ہے ۔ سائٹ کے مطالب ماخذ کے ساتھ نقل کر سکتے ہیں۔

آپ نے دیکھا ہوگا کہ اکثر لڑکیوں کے بال قدرتی طور پر بہت پیارے ہوتے ہیں لیکن کچھ عرصے بعد دیکھوں تو بالکل اجڑے ہوئے باغ کی طرح دکھائی دیتے ہیں پوچھو تو جواب آتا ہے کہ فلاں شادی یا فنگشن پر بال کھلے چھوڑ کر گئی تھی نظر لگ گئی اور یہ اکثر لڑکیوں کا مسئلہ ہے ویسے بھی نظربد کے بارے میں کافی احادیث ہیں اور اس کی کافی نشانیاں ہیں جو ہمیں قرآن و حدیث میں بتائی گئی ہیں کچھ نشانیاں انتہائی خطرناک ہیں اگر ان کا بروقت علاج نہ کیاگیا تو فورا موت بھی واقع ہوجاتی ہے اس تحریر میں انہی خطر ناک ترین نشانیوں کا ذکر کیا جائےگا جس کا جاننا ہر مسلمان پر ضرور ی ہے تا کہ وہ اپنا بروقت علاج کر سکیں۔

سب سے پہلے تو نظر بد کی حقیقت کیا ہے ؟اسلام میں تو اس کی بہت ساری احادیث اور واقعات کے ساتھ اس کا ذکر ملتا تو ہے مگر میڈیکل سائنس بھی اس کو تسلیم کرتی ہے میڈیکل سائنس کے مطابق ہر انسان کی آنکھ سے غیر مرئی لہریں نکلتی ہیں جن میں ایموشنل انرجی کی بجلی بھری ہوئی ہوتی ہے یہ بجلی جلدی مسامات میں کے ذریعے جسم میں جذب ہو کر جسم کی تعمیر یا تنزلی کا باعث بنتی ہے اگر ایموشنل انرجی کی بجلی یا لہریں مثبت ہو تو اس سے انسان کو نفع پہنچتا ہے اور اگر یہ لہریں منفی ہوں تومسلسل نقصان ہوتا ہے اب بد نظر شخص کی آنکھ سے نکلنی والی لہریں دراصل منفی ہوتی ہیں اور ان کے اندر اتنی قوت ہوتی ہے کہ وہ جسم کے نظام کو درہم برہم کردیتی ہیں۔

ایک بدنظر شخص نے حسین مکھڑے کو دیکھ کر اپنی غیر مرئی لہریں چھوڑیں تو دوسرے شخص کا چہرہ سیاہ ہوگیا تو اس بدنظری کی لہروں نے اس کے خون میں میلانن کو زیادہ کردیا جس سے جلد کی رنگت سیاہ ہوگئی یہ تو وہ تحقیق ہے جسے آج کی جدید سائنس سے ثابت کیا ہے احادیث مبارکہ میں اس منفی لہروں سے بچاؤ کا طریقہ اور اس سے نجات کے ذریعے کو واضح بیان کی گیا ہے نبی کریم ﷺ کے دور مبارک میں بھی کچھ ایسا ہی مسئلہ درپیش آیا تو آپ ﷺ نے اس مریض کا علاج بہترین انداز سے فرمایا سنن ابی ماجہ میں حدیث ہے سیدنا سہل بن حنیف ؓ نہارہے تھے کہ سیدنا عامر بن ربیعہ ؓ گزرے انہوں نے سہل ؓ کو دیکھ کرفرمایا جیسا خوش رنگ جسم آج دیکھا ہے پہلے کبھی نہیں دیکھا کسی پردہ نشین کی جلد بھی ایسی خوش رنگ نہیں ہوتی وہ فورا ہی زمین پر گر پڑے اچانک تیز بخار ہوا کہ کھڑے نہ رہ سکے۔

انہیں نبی کریمﷺ کے پاس لایا گیا اور کہا گیا کہ سہیل ؓ کی خبر لیجئے وہ تو گرے پڑے ہیں نبی ﷺ نے ارشادفرمایا تمہیں اس کے بارے میں کس پر شک ہے لوگوں نے کہا عامر بن ربیعہ ؓ کی نظر لگی ہے نبی کریم ﷺ نے فرمایا کیا وجہ ہے کہ ایک آدمی اپنے بھائی کو قتل کرنے والی حرکت کرتا ہے اگر کسی کو اپنے بھائی کی کوئی چیز نظر آئے جو اسے اچھی لگے تو اسے چاہئے کہ اسے برکت کی دعا دے پھر پانی طلب فرمایا اور عامر ؓ کو حکم دیا کہ وہ وضو کریں چنانچہ انہوں نے اپنا چہرہ کہنیوں تک دونوں ہاتھ تہہ بند کے اندر کا حصہ دھویا آپﷺ نے وہ پانی سہیل ؓ پر ڈالنے کا حکم دیا مندرجہ بالا حدیث سے نظر لگنااور اس کا علاج ہونا ثابت ہوا اگر کوئی چیز اچھی لگے۔

تو اس کے لئے برکت کی دعاکرنی چاہئے یا یوں کہے ماشاء اللہ لا قوۃ الا باللہ اس دعا کی برکت سے اللہ تعالیٰ اس منفی نظر بد سے انسان کو محفوظ کرتا ہے۔اب یہ تو نظر بد کی حقیقت ہے اب اس کی خطرناک ترین نشانیاں کونسی ہیں جن کو سمجھنا ہر مسلمان کے لئے بہت ضروری ہے تا کہ وہ اس کا علاج فوری طور پر کرسکے نظر جادو سے زیادہ خطر ناک ہے اور عام ہے جادو اور نظر کی اکثر علامات ملتی جلتی ہیں ہاں بعض علامات سے پہچانا جاسکتا ہے کہ یہ جادو نہیں نظر ہے نظر یا تو کسی کے حسد کی وجہ سے لگتی ہے یا پھر تعجب کی وجہ سے ۔یادرہے کہ تعجب کی نظر ماں باپ کی بھی لگ جاتی ہے یعنی والدین بھی اگر بچوں کو دعا نہ دیں تو بچے ان کی نظر کا بھی شکار ہوجاتے ہیں ۔

نظر بد کی علامت

Comments are closed.

“سلسلہ سوال و جواب نمبر-159″
سوال_کیا نظر بد سچ میں لگ جاتی ہے؟ نیز اسکی علامات کیا ہیں؟ اور مسنون طریقہ علاج بھی بیان کریں؟

Published Date: 4-12-2018

جواب..!
الحمدللہ..!

ارشاد باری تعالیٰ ہے:
🌷وَإِن يَكَادُ ٱلَّذِينَ كَفَرُواْ لَيُزۡلِقُونَكَ بِأَبۡصَٰرِهِمۡ
(القلم:51)
ترجمہ : اور کافر (جب یہ نصیحت کی کتاب سنتے ہیں تو) یوں لگتا ہے کہ تم کو اپنی (بری) نگاہوں سے پھسلا دیں گے۔
بعض مفسرین نے اس آیت کی تفسیر میں فرمایا ہے کہ وہ آپ کو نظر لگا دیں گے۔

نظر بد کی علامت

🌷سیدنا ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا:
((العین حق))
نظر (کا لگنا) حق ہے
( صحیح بخاری: حدیث نمبر-5740)

🌷سیدہ اسماء بنت عمیس رضی اللہ تعالیٰ عنہا سے روایت ہے کہ میں نے کہا :
اے اللہ کے رسول ! بنو جعفر (طیار رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے بچوں) کو نظر لگ جاتی ہے تو کیامیں ان کو دم کروں؟ آپ ﷺ نے فرمایا : ((نعم ولو کان شئ یسبق القدر لسبقتہ العین.)) جی ہاں !
اور اگر کوئی چیز تقدیر پر سبقت لے جاتی تو وہ نظر ہوتی۔
( سنن الترمذی: حدیث نمبر_۲۰۵۹ )
وقال: “حسن صحیح”

🌷سیدہ عائشہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا سے روایت ہے کہ نبی ﷺ نے (مجھے) حکم دیا کہ نظر کا دم کرو۔
(صحیح بخاری: حدیث نمبر-5738)

🌷سیدہ ام سلمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا سے روایت ہے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کے گھر میں ایک لڑکی دیکھی جس کے چہرے پر ( نظر بد لگنے کی وجہ سے ) کالے دھبے پڑ گئے تھے۔ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ اس پر دم کرا دو کیونکہ اسے نظر بد لگ گئی ہے
(صحیح بخاری: حدیث نمبر-5739)

🌷سیدنا عمران بن حصین رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ نبی کریم ﷺ نے فرمایا:((لا رقیۃ إلا من عین أوحمۃ.))
دم صرف نظر اور ڈسے ہوئے (کے علاج) کے لئے ہے۔
(سنن ابی داود : حدیث نمبر-3884)

🌷سیدنا ابوامامہ بن سہل بن حنیف رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ میرے والد سہل بن حنیف (رضی اللہ تعالیٰ عنہ ) نے غسل کیا تو عامر بن ربیعہ (رضی اللہ تعالیٰ عنہ ) نے انہیں دیکھ لیا اور کہا: میں نے کسی کنواری کو بھی اتنی خوبصورت جلد والی نہیں دیکھا۔ سہل بن حنیف (رضی اللہ تعالیٰ عنہ) شدید بیمار ہوگئے ۔ جب رسول اللہ ﷺ کو معلوم ہوا تو آپ نے فرمایا : تم اپنے بھائیوں کو کیوں قتل کرنا چاہتے ہو؟تم نے برکت کی دعا کیوں نہیں کی ؟ ((إن العین حق)) بے شک نظر حق ہے ۔
(موطأ امام مالک ۹۳۸/۲ حدیث نمبر-1801)
و سندہ صحیح و صححہ ابن حبان، الموارد: ۱۴۲۴)

🌹سیدنا جابر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے یہ بھی روایت ہے کہ نبی کریم ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے سیدہ اسماء بنت عمیس ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ سے فرمایا : میرے بھائی (سیدنا جعفر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ ) کی اولاد کے جسموں کو کیا ہو گیا ہے، یہ کمزور ہیں، کیا یہ فاقہ میں ہیں؟ میں نے کہا: جی نہیں، ان کو نظر بد بہت جلد لگ جاتی ہے تو کیا ہم ان کو دم کر لیا کریں؟ آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: کون سے کلام کے ساتھ؟ جب انھوں نے اپنا کلام پیش کیا تو آپ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وآلہ ‌وسلم نے فرمایا: انہیں دم کرلیا کرو۔
(مسند احمد،حدیث نمبر-14573)

*ان روایات سے معلوم ہوا کہ نظر لگنے کا برحق ہونا متواتر احادیث سے ثابت ہے*

_________&&&_______

*نظر بد کی علامات*
نظر بد ، نظر جادو سے زیادہ خطرناک ہے اور عام ہے جادو اور نظر کی اکثر علامات ملتی جلتی ہیں ہاں بعض علامات سے پہچانا جا سکتا ہے کہ یہ جادو نہیں نظر ہے،
نظر یا تو کسی کے حسد کی وجہ سے لگتی ہے یا پھر تعجب کی یاد رہے تعجب کی نظر ماں باپ کی بھی لگ جاتی ہے یعنی والدین بھی اگر بچوں کو دعاء نہ دیں تو بچے ان کی نظر کے بھی شکار ہو جاتے ہیں،

ایک صاحب بتلاتے ہیں کہ الریاض میں ایک پروگرام میں ایک راقی نے ہمیں بتایا کہ وہ ایک ایسے گھرانے کو جانتا ہے جن کا بچہ والدہ کا دودھ بہت پیتا تھا ایک دن اس کے باپ نے کہا یہ تو ہر وقت ماں ہی کی گود میں چڑٓھا رہتا ہے چھوڑتا ہی نہیں ہے اسی لمحے وہ بچہ ساکت ہو گیا ہسپتال لے کے گئے لیکن بچہ کچھ دیر کے بعد فوت ہو گیا اور اس بچے کی ماں کا علاج کرتے ہوئے 3 ماہ ہو چکے تھے
جن لوگوں کی نظر لگتی ہے عموما وہ معاشرے میں معروف ہوتے ہیں کہ فلان کی نظر لگ جاتی ہے یا دوسری علامت یہ ہے کہ جن کی نظر لگی ہوتی ہے،
ان کو دیکھ کے انسان کی طبیعت عموما خراب ہوتی ہے غصہ چڑچڑا پن عجیب سے بے چینی محسوس ہوتی ہے یا پھر انسان کسی کو دیکھتا ہے خواب میں جو صرف ٹکٹکی باندھ کر اسے دیکھ رہا ہوتا ہے کہتا کرتا کچھ نہیں ہے ، بعض اوقات نظر لگنے کے بعد بچہ بہت روتا ہے ،دودھ نہیں پیتا، وغیرہ وغیرہ

*نظر بد کی جو علامات صحیح احادیث میں اوپر ہم نے پڑھی وہ یہ ہیں*

1_ کسی کے چہرے پر اچانک سیاہ دھبے پڑ جانا،

2_کسی صحت مند انسان کا اچانک سے کمزور پڑ جانا، بھوک نا لگنا وغیرہ

3_کسی کے دیکھنے سے فوراً چکر آنا، یا شدید بیمار ہو جانا، یا گر جانا

_________&&&&&&____________

🌷🌷نظر بد کا علاج🌷🌷

🔶نظر بد لگنے کے بعد لوگوں میں اس کے علاج کے متعلق بڑی بدعقیدگی اور رسومات ہیں جنہیں عام مسلمان شرعی علاج سمجھتے ہیں ۔ لوگوں میں جادو ٹونہ یا نظر بد کے علاج کے لئے کالی چیز کو ڈھال بنایا جاتا ہے جیسے کوئی گاڑی کو نظر بد بچانے کی خاطر کالا کپڑا باندھ دیتے ہیں، نیا گھر بناتے ہیں تو اس کے اوپر کالی ہانڈی رکھ دیتے ہیں ، یا خود کو نظر سے بچانے کے لئے بدن پہ کالا دھاگہ باندھتے ہیں ۔ اسی طرح نظر بد کے علاج میں کالی مرچ جلا کر اس کی دھونی دیتے ہیں ۔ اس کے علاوہ بہت سے عمل ہیں جو نظر اتارنے کے لئے کئے جاتے ہیں جبکہ ہمیں اسلام نے نظر بد کا شرعی طریقہ بتایا ہے ۔ اس لئے رسم و رواج سے پرہیز کریں اور اپنے اندر سے ضعیف الاعتقادی ختم کریں ۔

1⃣ نظر بد سے پیشگی حفاظت تدبیر اختیار کرنے میں کوئی حرج نہیں ایسا کرناتوکل کے منافی بھی نہیں بلکہ یہی عین توکل ہے، کیونکہ یہ تو اللہ سبحانہ وتعالیٰ پر اعتماد کرنا اور ان اسباب کو اختیار کرنا ہے جن کو اس نے مباح قرار دیا یا جن کے استعمال کا اس نے حکم دیا ہے۔

🌹نبی صلی اللہ علیہ وسلم حضرت حسن وحسین رضی اللہ عنہ کو ان کلمات کے ساتھ دم کیا کرتے تھے:
«أَعِيْذُکَمَا بِکَلِمَاتِ اللّٰهِ التَّامَّةِ مِنْ کُلِّ شَيْطَانٍ وَّهَامَّةٍ وَمِنْ کُلِّ عَيْنٍ لَامَّةٍ»
’’میں تم دونوں کو اللہ تعالیٰ کے کلمات تامہ کی پناہ میں دیتا ہوں، ہر شیطان اور زہریلی بلا کے ڈر سے اور ہر لگنے والی نظر بد کے شر سے۔‘‘
آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ حضرت ابراہیم علیہ السلام بھی اسماعیل واسحاق علیہما السلام کو اسی طرح دم کیا کرتے تھے
(جامع الترمذی، الطب، باب کیف یعوذ الصبیان، ح:2060)

2⃣ اگر عائن یعنی نظر لگانے والے ، یا جس کی نظر لگی ہو اُس کا پتہ ہو تو اُسے وضوء کرنے اور اپنی کمر سے نیچے والے حصوں کو دھونے کا حکم دِیا جائے ، اور جو پانی اُس کے جِسم کو چُھو کر گرے ، اُس پانی کو ایک برتن میں جمع کر کے ، معین ، یعنی جسے نظر لگی ہو ، اُس کے سر پر پچھلی طرف سے سارے جسم پر بہایا جائے ، اللہ تعالیٰ کے حکم سے نظر بد کا اثر ختم ہو جاتا ہے،

اسکی دلیل،
🌹عامر بن ربیعہ رضی اللہ عنہ کا گزر سہل بن حنیف رضی اللہ عنہ ( ابوامامہ کے باپ ) کے پاس ہوا، سہل رضی اللہ عنہ اس وقت نہا رہے تھے، عامر نے کہا: میں نے آج کے جیسا پہلے نہیں دیکھا، اور نہ پردہ میں رہنے والی کنواری لڑکی کا بدن ایسا دیکھا، سہل رضی اللہ عنہ یہ سن کر تھوڑی ہی دیر میں چکرا کر گر پڑے، تو انہیں نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں لایا گیا، اور عرض کیا گیا کہ سہل کی خبر لیجئیے جو چکرا کر گر پڑے ہیں، آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے پوچھا: تم لوگوں کا گمان کس پر ہے ؟ لوگوں نے عرض کیا کہ عامر بن ربیعہ پر، آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: کس بنیاد پر تم میں سے کوئی اپنے بھائی کو قتل کرتا ہے ، جب تم میں سے کوئی شخص اپنے بھائی کی کسی ایسی چیز کو دیکھے جو اس کے دل کو بھا جائے تو اسے اس کے لیے برکت کی دعا کرنی چاہیئے، پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے پانی منگوایا، اور عامر کو حکم دیا کہ وضو کریں، تو انہوں نے اپنا چہرہ اپنے دونوں ہاتھ کہنیوں تک، اور اپنے دونوں گھٹنے اور تہبند کے اندر کا حصہ دھویا، اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے انہیں سہل رضی اللہ عنہ پر وہی پانی ڈالنے کا حکم دیا
(سنن ابن ماجہ،حدیث نمبر-3509)
مؤطا امام مالک،حدیث نمبر-2708)

3_” *دم سے بھی نظر بد کا علاج کیا جا سکتا ہے، مگر دم شرکیہ نا ہو،*
🌹حضرت عوف بن مالک اشجعی رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے انہوں نے بیان کیا::ہم زمانہ جاہلیت میں دم کیا کرتے تھے ہم نے عرض کی: اللہ کے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم !
اس کے بارے میں آپ کا کیا خیال ہے؟آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فر ما یا :اپنے دم کے کلمات میرے سامنے پیش کرو ،
اس دم میں کو ئی حرج نہیں جب تک اس میں شرک نہ ہو۔
(صحیح مسلم،حدیث نمبر_2200)

علماے کرام کااس بات پراجماع ہےکہ درج ذیل تین شرائط کے ساتھ دم کرناجائز ہے:

1. دم کلام الٰہی ، اسمائےحسنیٰ، صفاتِ باری تعالیٰ کےذریعے یا مسنون دعاؤں سے ہونا چاہیے۔
2. دم مسنون الفا ظ میں اور خالص عربی زبان میں ہو ،قرآنی آیات اور دعاؤں کا ترجمہ نہ ہو۔
3. دم کرنے اور کروانے والے کا عقیدہ یہ ہو کہ دم بذاتِ خود مؤثر نہیں بلکہ شفا دینے والی صرف اللّٰہ تعالیٰ کی ذات ہے۔دم وغیرہ تو اس کے حضور محض التجا و درخواست ہے

۔”
🌷🌷نظر کا دم یہ ہے:🌷🌷

اَعُوْذُ بِکَلِمَاتِ اللّٰہِ التَّامَّة مِنْ شَرِّ کُلِّ شَیْطَانٍ وَہَامَّة وَمِنْ کُلِّ عَیْنٍ لَامَّة
’’ میں اللہ کے کلمات تامہ کے ذریعے ہر شیطان، زہریلے جانور اور ہر ضرر رساں نظر کے شر سے پناہ مانگتا ہوں۔‘‘

*دوسرے کو دم کرنا ہو تو اَعُوْذُ کی جگہ اُعِیْذُك پڑھے*

🌹جبرئیل علیہ السلام نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو دم کرتے ہوئے یہ کلمات پڑھا کرتے تھے:
«بِاسْمِ اللّٰهِ اَرْقِيْکَ، مِنْ کُلَّ شَيْئٍ يُؤْذِيْکَ، مِنْ شَرِّ کُلِّ نَفْسٍ اَوْ عَيْنٍ حَاسِدٍ، اَللّٰهُ يَشْفِيْکَ، بِاسْمِ اللّٰهِ اَرْقِيْکَ»
(صحیح مسلم، السلام، باب الطب والمرض والرقی، ح:2184)
’’اللہ کے نام کے ساتھ میں آپ کو دم کرتا ہوں، ہر اس چیز سے جو آپ کو تکلیف دے، اور ہر انسان کے یا حسد کرنے والی آنکھ کے شر سے، اللہ آپ کو شفا دے، میں اللہ کے نام کے ساتھ آپ کو دم کرتا ہوں۔‘‘

🌹 حضرت عائشہ رضی اللہ تعالی عنہ نے بیان کیا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے حکم دیا کے نظر بد لگ جانے پر معوذتین سے دم کرلیا جائے۔
(صحیح بخاری حدیث نمبر-5738)
معوذتین یعنی (سورہ فلق، سورہ الناس )

🌹آپﷺ کا ارشاد مبارک ہے ’’جو شخص صبح و شام تین تین مرتبہ ،
سورہ اخلاص، سورہ الفلق اور سورہ الناس پڑھے گا وہ ہر طرح کے مصائب اور رنج و غم سے محفوظ رہے گا۔‘‘
(سنن ابو داؤد،حدیث نمبر-5082)

🌹آیت الکرسی اور سورہ فاتحہ بھی نظر بد کے دم کے لیے مستحب ہے

4⃣ قرآن کریم کے ذریعہ علاج کرنا چاہیے کیونکہ قرآن شفا ہے ۔
🌹عبداللہ بن مسعود سے موقوفا ایک روایت میں ذکر ہے :
“عليكم بالشِّفائين العسلِ والقرآنِ”
(السنن الکبری للبیہقی)
ترجمہ : تم لوگ شفا دینے والی دو چیزوں کو اپنا لو قرآن کریم اور شہد۔
( السنن الكبرى للبيهقي ٩/٣٤٤ )

*شفا کی نیت سے مریض پر قرآن پڑھ کر پھونکنا:قران اگر پہاڑ پر نازل ہوا ہوتا تو اس کے ٹکڑے ٹکڑے ہو جاتے تو کیا وہ گوشت اور خون سے بنے جسم کو شفا نہیں بخش سکتا؟
ابن القیم رحمہ اللہ کہتے ہیں:
قرآن میں تمام دنیاوی اور اخروی بیماریوں نیز تمام جسمانی اور قلبی امراض سے مکمل شفا ہے، چاہے اس میں وقت لگے۔

🌹5: اسمائے حسنی کے ذریعہ اللہ تعالی سے اس مرض کی شفا یابی کے لئے دعا کرنا ۔ اللہ تعالی دعاؤں کو قبول کرتا ہے اور بندوں کی مصیبت ٹال دیتا ہے ۔

نظر بد کی علامت

🌹6: نماز کی پابندی کرنا اور صبح وشام کی مسنون دعائیں پڑھنا،
اگر انسان صبح اور شام اور سونے وغیرہ کے اذکار میں پابندی کرے تو اس کا انسان کو نظر بد کی حفاظت میں بہت بڑا اثر ہے اور یہ ان شاء اللہ اسکے لئے ڈھال کا کام دے گا تو اس کی پابندی ضروری ہے۔

*مذکورہ بالا جائز طریقوں سے نظر بد کا علاج کیا جائے اور خودساختہ ذرائع سے پرہیز کیا جائے ، اگر کسی کو خودساختہ طریقے سے شفا مل جائے تو دلیل نہیں بن سکتی،*

کیونکہ حدیث پاک میں ارشاد ہے :

🌹 سیدنا عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو فرماتے ہوئے سنا ”دم جھاڑ‘ گنڈے منکے اور جادو کی چیزیں یا تحریریں شرک ہیں۔“ ان کی اہلیہ نے کہا: آپ یہ کیوں کر کہتے ہیں؟ اللہ کی قسم! میری آنکھ درد کی وجہ سے گویا نکلی جاتی تھی تو میں فلاں یہودی کے پاس جاتی اور وہ مجھے دم کرتا تھا۔ جب وہ دم کرتا ہو میرا درد رک جاتا تھا۔ سیدنا عبداللہ رضی اللہ عنہ نے کہا: یہ شیطان کی کارستانی ہوتی تھی۔ وہ تیری آنکھ میں اپنی انگلی مارتا تھا‘ تو جب وہ (یہودی) دم کرتا تو (شیطان) باز آ جاتا تھا۔ حالانکہ تجھے یہی کچھ کہنا کافی تھا جیسے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کہا کرتے تھے «أذهب الباس رب الناس، اشف أنت الشافي، لا شفاء إلا شفاؤك، شفاء لا يغادر سقما» ”اے لوگوں کے رب! دکھ دور کر دے‘ شفاء عنایت فرما‘ تو ہی شفاء دینے والا ہے‘ تیری شفاء کے سوا کہیں کوئی شفاء نہیں‘ ایسی شفاء عنایت فرما جو کوئی دکھ باقی نہ رہنے دے،
(سنن ابو داؤد،حدیث نمبر-3883)

*اسلئے ! نظر بد کے اثرات کو ختم کرنے کے لئے ہمیں بے ہودہ کاموں و غیر شرعی طریقوں سے بچنا چاہیے اور نہ ہی اس سلسلے میں پیروں اور جعل ساز تعویذ فروشوں کے جال میں پھنس کر اپنا مال و اسباب اور ذہنی سکون برباد کرنا چاہیے۔ ہمیں یاد رکھنا چاہیے کہ ہمارے گھروں میں قرآن پاک کی صورت میں منبع شفا موجود ہے اس کے علاوہ احادیث میں دعائیں اور وظائف بھی وارد ہوئے ہیں جنہیں پڑھنے کے لئے کسی کی اجازت کی قطعاً ضرورت نہیں ہر مشکل کے حل کے لئے اللہ کے کلام، مسنون دعاؤں اور وظائف کی طرف رجوع کرنا چاہیے۔*

نوٹ:
🌺. اتفاقی ناکامی یا کاروباری نقصان یا شادی میں رکاوٹ کو نظر بد کا نتیجہ قرار دینا غلط ہے ۔ایسی صورت میں نماز کی اور مسنون دعاؤں کی پابندی کریں۔

🌺. بعض عورتوں کا اپنے شوہروں کی علمی، ادبی اور کاروباری مصروفیات کو عدم توجہی کا نام دے کرنظر بد کا نتیجہ قرار دینا بھی غلط ہیں،

🌺. نفسیاتی مرض : بعض لوگ حقیقت میں نفسیاتی مریض ہوتے ہیں ،لیکن وہ اپنے نفسیاتی مریض ہونے کا اعتراف کرنے سے گریز کرتے ہیں۔اس لئے وہ نفسیاتی ہسپتالوں میں جانے اور وہاں علاج کرانے میں اپنی ہتک سمجھتے ہیں ۔۔

🌹سب سے پہلے طبی اور نفسیاتی معائنے کے ذریعہ یہ جان لینا از حد ضروری ہے کہ نظر لگی ہے ، اکثر ایسا ہوتا ہے کہ بیماری کچھ نہیں ہوتی محض وہم و گمان ہوتا ہے اور وھم ایسی خوفناک بیماری ہے جو بہت سے بیماریوں کا سبب بن جاتی ہے اور بسا اوقات انسان کو موت تک لے جاتی ہے۔ اس لئے مسنون دعاؤں کے ساتھ ساتھ علاج بھی ضروری ہے:

🌹صحیح مسلم میں ہے کہ حضرت رسول کریمﷺ نے فرمایا :
«لكل داء دواء فإذا أصيب دواء الداء برأ بـإذن الله عزّوجلّ»
”ہر بیماری کی دوا ہے۔ جب بیماری کو اس کی اصل دوامیسر ہوجائے تو انسان عزوجل کے حکم سےشفایاب ہوجاتا ہے۔”

🌹صحیح بخاری میں ہے کہ حضرت رسول اللّٰہﷺ نے فرمایا:
«ما أنزل الله دآء إلا أنزل له شفاء»
”اللّٰہ تعالیٰ نے کوئی ایسی بیماری نازل نہیں کی جس کی شفا نازل نہ کی ہو۔”

🌹جامع ترمذی کی ایک اور حدیث میں ہے کہ آپﷺ نے علاج معالجے کے متعلق صحابہ کرام کے ایک سوال کے جواب میں فرمایا:
«نعم يا عباد الله تداووا. فان الله عَزّ وجل لم يضع داء إلا وضع له شفاء أو دواء إلا داء واحدا فقالوا:یا رسول الله وما هو؟ قال: الهرم»
”ہاں، اے اللّٰہ کے بندو! علاج معالجہ کروا لیا کرو، اللّٰہ تعالیٰ نے کوئی ایسی بیماری نہیں رکھی جس کی شفا نہ رکھی ہو، سوائے ایک بیماری کے۔ صحابہ کرام نے پوچھا: وہ کون سی بیماری ہے؟ آپﷺ نے فرمایا: وہ ہے بڑھاپا۔”

((مزید دم کا مسنون طریقہ جاننے کے لیے پڑھیں_ سلسلہ نمبر-36))

*اللہ پاک تمام مسلمانوں کو نظر بد اور ہر طرح کی بیماری سے محفوظ فرمائے آمین*

*واللہ تعالیٰ اعلم باالصواب*

🌷اپنے موبائل پر خالص قران و حدیث کی روشنی میں مسائل حاصل کرنے کے لیے “ADD” لکھ کر نیچے دیئے گئے نمبر پر سینڈ کر دیں،
🌷آپ اپنے سوالات نیچے دیئے گئے نمبر پر واٹس ایپ کر سکتے ہیں جنکا جواب آپ کو صرف قرآن و حدیث کی روشنی میں دیا جائیگا,
ان شاءاللہ۔۔!!
🌷سلسلہ کے باقی سوال جواب پڑھنے کے لئے ہماری آفیشل ویب سائٹ وزٹ کریں یا ہمارا فیسبک پیج دیکھیں::

یا سلسلہ نمبر بتا کر ہم سے طلب کریں۔۔!!

*الفرقان اسلامک میسج سروس*
+923036501765

آفیشل ویب سائٹ
https://alfurqan.info/

آفیشل فیسبک پیج//
https://www.facebook.com/Alfurqan.sms.service2

ADD

whatsap plz

اسلام عليکم جناب
میری اس علامات هی برای مهربانی مج سی مدد کریګی شریکه

Copyright © 2019 All Rights Reserved | Developed & Maintained by DUO Designs

نی نی سایت

نظر بد کی علامت
نظر بد کی علامت

دیدگاهی بنویسید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد.