نظر انداز کرنے کی سزا

نظر انداز کرنے کی سزا
نظر انداز کرنے کی سزا

محبت سے مکر جانا ضروری ہو گیا تھا

پلٹ کے اپنے گھر جانا ضروری ہو گیا تھا

نظر انداز کرنے کی سزا دینی تھی تجھ کو

ترے دل میں اتر جانا ضروری ہو گیا تھا

میں سناٹے کے جنگل سے بہت تنگ آ گئی تھی

نظر انداز کرنے کی سزا

کسی آواز پر جانا ضروری ہو گیا تھا

میں سسی کی طرح سوتی رہی اور چل دیے تم

بتا دیتے اگر جانا ضروری ہو گیا تھا

تعاقب خود نہ کرتی تو مرے آنسو نکلتے

میں کیا کرتی قمرؔ جانا ضروری ہو گیا تھا

Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

You have remaining out of 5 free poetry pages per month. Log In or Register to become Rekhta Family member to access the full website.

Sign up and enjoy FREE unlimited access to a whole Universe of Urdu Poetry, Language Learning, Sufi Mysticism, Rare Texts

Devoted to the preservation & promotion of Urdu

The best way to learn Urdu online

Online Treasure of Sufi and Sant Poetry

World of Hindi language and literature

A three-day celebration of Urdu

  

محبت سے مکر جانا ضروری ہو گیا تھا 

پلٹ کے اپنے گھر جانا ضروری ہو گیا تھا 

نظر انداز کرنے کی سزا دینی تھی تجھ کو 

ترے دل میں اتر جانا ضروری ہو گیا تھا 

نظر انداز کرنے کی سزا

میں سناٹے کے جنگل سے بہت تنگ آ گئی تھی 

کسی آواز پر جانا ضروری ہو گیا تھا 

میں سسی کی طرح سوتی رہی اور چل دیے تم 

بتا دیتے اگر جانا ضروری ہو گیا تھا 

تعاقب خود نہ کرتی تو مرے آنسو نکلتے 

میں کیا کرتی قمرؔ جانا ضروری ہو گیا تھا 

شاعرہ: ریحانہ قمر

Muhabbat    Say    Mukar   Jaana    Zaroori    Ho   Gaya   Tha

Palatt   K    Apnay    Ghar   Jaana   Zaroori    Ho   Gaya   Tha

 Nazar    Andaaz    Karnay   Ki    Sazaa   Deni   Thi   Tujh   Ko

Tiray   Dil   Men   Utar  Jaana   Zaroori    Ho   Gaya   Tha

 Main   Sannaatay   K   Jangal    Say   Bahut   Tang   Aa   Gai   Thi

Kisi    Awaaz   Par   Jaana    Zaroori    Ho   Gaya   Tha

 Main   Sassi   Ki   Tarah    Soti   Rahi    Aor    Chall  Diay Tum

Bataa    Detay   Agar    Jaana   Zaroori    Ho   Gaya   Tha

 

Taaqob   Khud    Na    Karti   To   Miray   Aansu   Nikaltay 

Main   Kay  Karti   QAMAR   Jaana   Zaroori    Ho   Gaya   Tha

Poet: Rehana   Qamar

 

You are subscribed Successfully

Copyright 2022. Reproduction of this website’s content without express written permission from ‘Daily Pakistan’ is strictly prohibited.


Downloads-icon

اردو کی معیاری اور خوبصور ت شاعری



شام کے پیچ و خم ستاروں سے زینہ زینہ اُتر رہی ہے رات یوں صبا پاس سے گزرتی ہے جیسے کہہ دی کسی نے پیار کی بات صحنِ زنداں کے بے وطن اش…

کسی شخص اور / یا صورت حال کو نظر انداز کرنے میں نفسیاتی دفاع یا سزا کا سب سے عام طریقوں میں سے ایک ہے. واضح سادگی کے ساتھ، یہ آسان چال کے طور پر زیادہ مؤثر نہیں ہے. یہ خطرہ یہ ہے کہ اس کی تکنیک کو کم از کم بعض مسائل کی حتمی حل کی طرف اشارہ کرنا پڑتا ہے، کیونکہ حقیقت میں یہ کسی بھی کارروائی سے بچنے کا ایک طریقہ ہے. ہم آج نظر انداز کرنے کے نفسیات کے بارے میں مزید بات کریں گے.

نظر انداز کر کے، ایک خاص مسئلہ کے ظہور پر دفاعی ردعمل کی ایک ٹیکنالوجی کے طور پر، ایک شخص ایک حقیقت حقیقت پیدا کرتا ہے، جس میں کوئی معلومات بلاک نہیں ہے. نام نہاد نظر انداز کرنے والا میٹرکس اسے تلاش کرنے میں مدد کرتا ہے.

نظر انداز میٹرکس ایک خاص ماڈل ہے جو قسم اور سطح کے لحاظ سے نظر انداز کرتی ہے. یہ دو تصورات اسی طرح ہیں اور کچھ حد تک متغیر ہوتے ہیں.

1. نظر انداز کرنے کی اقسام:

2. سطح کی نظر انداز:

نظر انداز کرنے کی سزا

نظر انداز میٹرکس تین اقسام (اقسام) اور چار قطاروں (سطحوں) کی ایک شکل کی تشکیل، نظر انداز کرنے کے تمام اقسام اور اقسام کے مجموعے فراہم کرتا ہے. نظر انداز میٹرکس کا استعمال کرنے کا طریقہ آپ کو کسی مخصوص مسئلہ کے حل کو روکنے کے بغیر، نظر انداز کی گئی معلومات کے اس حصے کو تلاش کرنے کی اجازت دیتا ہے. ایسا کرنے کے لئے، آپ کو ہر سیل کی جانچ پڑتال شروع کرنا لازمی ہے، جو میٹرکس کے اوپری بائیں کونے سے شروع ہو چکا ہے.

یہ منطقی نظر انداز کے طور پر اس طرح کے رجحان کے بارے میں ذکر ہونے کے قابل ہے، جب ہمارے غیر فطری رویے حقیقت یہ ہے کہ ہم کسی خاص عمل میں حصہ لینے سے کوئی ذاتی فائدہ نہیں دیکھتے ہیں. سب سے زیادہ عام مثال انتخابات میں جانے کے لئے ناگزیر ہے، مظاہروں میں شرکت، وغیرہ. اس صورت میں، نظر انداز کرنے کی نفسیات کو بھی تحفظ کے طور پر دیکھا جاتا ہے، اس صورت میں، جذباتی ہمیں توانائی کے اخراجات کی حفاظت کرتا ہے.

اکثر ہم نظر انداز کرنے کا طریقہ استعمال کرتے ہیں، دوسروں کو کسی طرح سے اثر انداز کرنے کی کوشش کرتے ہیں. کسی شخص کو نظر انداز کرنے کے نفسیات یہ ہے کہ ہم شعور سے ان پر توجہ نہ دیں جن کو ہم مجرمانہ سزا دینا چاہتے ہیں.

اس کے علاوہ، بے ترتیب طور پر نظر انداز کرنے کی وجہ، توجہ کو اپنی طرف متوجہ کرنے کی کوشش ہو سکتی ہے. لہذا، مثال کے طور پر، مرد کی عورت کو نظر انداز کرنے کی وجہ سے انسان اس کے جرم کو ظاہر کرنے کی خواہش ہو سکتی ہے. مسئلہ یہ ہے کہ ایسی ایک طریقہ، ایک قاعدہ کے طور پر، جارحانہ اور ایک باہمی غلط فہمی سے متعلق ہے. مرد عام طور پر پتہ نہیں کہ کس طرح نظر انداز کرنے کا جواب دینا، اور اسی سکین میں جواب دینا. یہ غیر فعالی اور بڑھتی ہوئی تنازعات کا ایک شیطانی دائرہ ہے.

ایک ہی وقت میں، جب وہ ایسے شخص کی توجہ کو اپنی طرف متوجہ کرنا چاہتے ہیں تو لڑکیوں اکثر بے حد استعمال کرتے ہیں. اس صورت میں، وہ بدنام شکار کی نگہداشت پر شمار کرتے ہیں.

ویسے بھی، نظر انداز ایک ناقابل عمل عمل ہے، جس کا استقبال ہے، ایک شخص کو شعور سے اپنی طاقت اور ذمہ داری کا نام دیا جاتا ہے. یاد رکھیں، اکثر یہ طریقہ توقعات کو پورا نہیں کرتا.


© 2022 ur.unistica.com

نی نی سایت

نظر انداز کرنے کی سزا
نظر انداز کرنے کی سزا

Comments

دیدگاهتان را بنویسید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد. بخش‌های موردنیاز علامت‌گذاری شده‌اند *