نظر انداز پہ شاعری

نظر انداز پہ شاعری
نظر انداز پہ شاعری



SadPoetry.org

SadPoetry.org

نظر انداز کرتے ہو ، لو ہٹ جاتے ہیں نظروں سے
انہی نظروں سے ڈھونڈو گے ، نظر جب ہَم نہ آئیں گے

لئے تڑپنا اور اگر نگاہ پڑ جائے تو اس سے زخمی ہوکر نڈھال ہوجانا عاشق کا مقدر ہوتا ہے ۔ ایک عاشق کو نظر انداز کرنے کے دکھ ، اور دیکھے جانے پر ملنے والے ایک گہرے ملال سے گزرنا ہوتا ہے ۔ یہاں ہم کچھ ایسے ہی منتخب اشعار پیش کر رہے ہیں جو عشق کے اس دلچسپ بیانیے کو بہت مزے دار انداز میں سمیٹے ہوئے ہیں ۔

کچھ تمہاری نگاہ کافر تھی

کچھ مجھے بھی خراب ہونا تھا

فقط نگاہ سے ہوتا ہے فیصلہ دل کا

نہ ہو نگاہ میں شوخی تو دلبری کیا ہے

نظر انداز پہ شاعری

نگاہیں اس قدر قاتل کہ اف اف

ادائیں اس قدر پیاری کہ توبہ

خدا بچائے تری مست مست آنکھوں سے

فرشتہ ہو تو بہک جائے آدمی کیا ہے

ادا سے دیکھ لو جاتا رہے گلہ دل کا

بس اک نگاہ پہ ٹھہرا ہے فیصلہ دل کا

کرنے گئے تھے اس سے تغافل کا ہم گلہ

کی ایک ہی نگاہ کہ بس خاک ہو گئے

نگاہ برق نہیں چہرہ آفتاب نہیں

وہ آدمی ہے مگر دیکھنے کی تاب نہیں

سب کچھ تو ہے کیا ڈھونڈتی رہتی ہیں نگاہیں

کیا بات ہے میں وقت پہ گھر کیوں نہیں جاتا

یہ کن نظروں سے تو نے آج دیکھا

کہ تیرا دیکھنا دیکھا نہ جائے

آنکھیں جو اٹھائے تو محبت کا گماں ہو

نظروں کو جھکائے تو شکایت سی لگے ہے

ساقی مجھے شراب کی تہمت نہیں پسند

مجھ کو تری نگاہ کا الزام چاہیئے

محبت کا تم سے اثر کیا کہوں

نظر مل گئی دل دھڑکنے لگا

دھوکا تھا نگاہوں کا مگر خوب تھا دھوکا

مجھ کو تری نظروں میں محبت نظر آئی

لوگ نظروں کو بھی پڑھ لیتے ہیں

اپنی آنکھوں کو جھکائے رکھنا

اب آئیں یا نہ آئیں ادھر پوچھتے چلو

کیا چاہتی ہے ان کی نظر پوچھتے چلو

ان رس بھری آنکھوں میں حیا کھیل رہی ہے

دو زہر کے پیالوں میں قضا کھیل رہی ہے

میں عمر بھر جواب نہیں دے سکا عدمؔ

وہ اک نظر میں اتنے سوالات کر گئے

دیدار کی طلب کے طریقوں سے بے خبر

دیدار کی طلب ہے تو پہلے نگاہ مانگ

ساقی ذرا نگاہ ملا کر تو دیکھنا

کمبخت ہوش میں تو نہیں آ گیا ہوں میں

تجھے دانستہ محفل میں جو دیکھا ہو تو مجرم ہوں

نظر انداز پہ شاعری

نظر آخر نظر ہے بے ارادہ اٹھ گئی ہوگی

آنکھیں نہ جینے دیں گی تری بے وفا مجھے

کیوں کھڑکیوں سے جھانک رہی ہے قضا مجھے

دیکھی ہیں بڑے غور سے میں نے وہ نگاہیں

آنکھوں میں مروت کا کہیں نام نہیں ہے

جس طرف اٹھ گئی ہیں آہیں ہیں

چشم بد دور کیا نگاہیں ہیں

ادھر ادھر مری آنکھیں تجھے پکارتی ہیں

مری نگاہ نہیں ہے زبان ہے گویا

بے خود بھی ہیں ہشیار بھی ہیں دیکھنے والے

ان مست نگاہوں کی ادا اور ہی کچھ ہے

دید کے قابل حسیں تو ہیں بہت

ہر نظر دیدار کے قابل نہیں

پہلی نظر بھی آپ کی اف کس بلا کی تھی

ہم آج تک وہ چوٹ ہیں دل پر لیے ہوئے

ادا ادا تری موج شراب ہو کے رہی

نگاہ مست سے دنیا خراب ہو کے رہی

قیامت ہے تری اٹھتی جوانی

غضب ڈھانے لگیں نیچی نگاہیں

بات تیری سنی نہیں میں نے

دھیان میرا تری نظر پر تھا

دیکھا ہے کس نگاہ سے تو نے ستم ظریف

محسوس ہو رہا ہے میں غرق شراب ہوں

وہ نظر کامیاب ہو کے رہی

دل کی بستی خراب ہو کے رہی

برسوں رہے ہیں آپ ہماری نگاہ میں

یہ کیا کہا کہ ہم تمہیں پہچانتے نہیں

کوئی کس طرح راز الفت چھپائے

نگاہیں ملیں اور قدم ڈگمگائے

نگاہ ناز کی پہلی سی برہمی بھی گئی

میں دوستی کو ہی روتا تھا دشمنی بھی گئی

حال کہہ دیتے ہیں نازک سے اشارے اکثر

کتنی خاموش نگاہوں کی زباں ہوتی ہے

کب ان آنکھوں کا سامنا نہ ہوا

تیر جن کا کبھی خطا نہ ہوا

نگاہ ناز کی معصومیت ارے توبہ

جو ہم فریب نہ کھاتے تو اور کیا کرتے

ہے تیرے لیے سارا جہاں حسن سے خالی

خود حسن اگر تیری نگاہوں میں نہیں ہے

ساقی مرے بھی دل کی طرف ٹک نگاہ کر

لب تشنہ تیری بزم میں یہ جام رہ گیا

وہ کافر نگاہیں خدا کی پناہ

جدھر پھر گئیں فیصلہ ہو گیا

نظر بھر کے جو دیکھ سکتے ہیں تجھ کو

میں ان کی نظر دیکھنا چاہتا ہوں

ہائے وہ راز غم کہ جو اب تک

تیرے دل میں مری نگاہ میں ہے

لیا جو اس کی نگاہوں نے جائزہ میرا

تو ٹوٹ ٹوٹ گیا خود سے رابطہ میرا

سیدھی نگاہ میں تری ہیں تیر کے خواص

ترچھی ذرا ہوئی تو ہیں شمشیر کے خواص

کھڑا ہوں دیر سے میں عرض مدعا کے لیے

ادھر بھی ایک نظر کیجیے خدا کے لیے

مجھے تعویذ لکھ دو خون آہو سے کہ اے سیانو

تغافل ٹوٹکا ہے اور جادو ہے نظر اس کی

ساقی نے نگاہوں سے پلا دی ہے غضب کی

رندان ازل دیکھیے کب ہوش میں آئیں

شکست توبہ کی تمہید ہے تری توبہ

زباں پہ توبہ مبارکؔ نگاہ ساغر پر

تڑپ رہا ہے دل اک ناوک جفا کے لیے

اسی نگاہ سے پھر دیکھیے خدا کے لیے

Sign up and enjoy FREE unlimited access to a whole Universe of Urdu Poetry, Language Learning, Sufi Mysticism, Rare Texts

Devoted to the preservation & promotion of Urdu

The best way to learn Urdu online

Online Treasure of Sufi and Sant Poetry

World of Hindi language and literature

A three-day celebration of Urdu

میں نظر سے ایک انداز نظر ہوتا ہوا

کون ہے دن رات مجھ میں بے خبر ہوتا ہوا

کھلتا جاتا ہے سمندر بادباں در بادباں

میں سفر کرتا ہوا مجھ سے سفر ہوتا ہوا

ایک وسعت آسماں در آسماں بڑھتی ہوئی

نظر انداز پہ شاعری

اک پرندہ بال و پر میں تر بتر ہوتا ہوا

ایک پہنائی مکاں سے لا مکاں ہوتی ہوئی

ایک لمحہ مختصر سے مختصر ہوتا ہوا

ایک انگڑائی سے سارے شہر کو نیند آ گئی

یہ تماشا میں نے دیکھا بام پر ہوتا ہوا

کھینچ لی کس نے طناب خیمۂ صدق و صفا

کون ہے اس دشت غم میں بے ہنر ہوتا ہوا

Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

You have remaining out of 5 free poetry pages per month. Log In or Register to become Rekhta Family member to access the full website.

Sign up and enjoy FREE unlimited access to a whole Universe of Urdu Poetry, Language Learning, Sufi Mysticism, Rare Texts

Devoted to the preservation & promotion of Urdu

The best way to learn Urdu online

Online Treasure of Sufi and Sant Poetry

World of Hindi language and literature

A three-day celebration of Urdu

Apnipoetry.com | Best Urdu Poetry in Urdu & Roman Urdu Scripts.

نظر انداز کرتے ہو شدت سے
تم مجھے مار کیوں نہیں دیتے


Nazar Andaz Kartey Ho Shidat Se
Tum Mujhey Maar Kiyon Nahi Dete

by Ahmad | Jan 18, 2022

سرِ محفل کچھ اِس انداز سے لوٹا گیا ہوں میںہجومِ عام میں بھی میری تنہائی نہیں جاتی Sar-e-Mehfil Kuch Iss Andaz Se Loota Gaya Hoon MainHujoom-e-Aam…نظر انداز پہ شاعری

by Ahmad | Jan 18, 2022

تم یہ نہ سمجھ لینا کہ ہم وعدہ شِکن نکلےکچھ دیر تو لگتی ہےوعدوں کو نبھانے میں Tum Ye Na Samajh Lena K Hum Waada Shikan NikleKuch Der To Lagti Hai…

by Ahmad | Jan 18, 2022

اپنی یادوں کا سلسلہ روکومیری نیندیں حرام ہوتی ہیں Apni Yadoon Ka Silsila RokoMeri Neendein Haram Hoti Hein

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Comment

Name *

Email *

Website

Save my name, email, and website in this browser for the next time I comment.

Submit Comment

Δdocument.getElementById( “ak_js” ).setAttribute( “value”, ( new Date() ).getTime() );

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

APNIPOETRY.COM

اردو شاعری کو کاغذی ڈائیری سے ڈیجیٹل ڈائیری میں محفوظ کرنے کی ایک چھوٹی سی کاوش

اس ویب سائٹ پر موجود تمام مواد کے حقوق متعلقہ شعراء کے حق میں محفوظ ہیں

آپ اپنی شکایات یا تجاویز رابطہ فارم کے ذریعےبھیج سکتے ہیں۔

جملہ حقوق محفوظ ہیں © 2021

ApniPoetry.com

نی نی سایت

نظر انداز پہ شاعری
نظر انداز پہ شاعری

دیدگاهی بنویسید

نشانی ایمیل شما منتشر نخواهد شد.